سب نے دیکھا کہ موبائل سے سورہ فاتحہ بلند ہورہی ہے اور ملیحہ ماہی بے آب کی طرح تڑپ رہی ہے جبکہ۔۔۔

سب نے دیکھا کہ موبائل سے سورہ فاتحہ بلند ہورہی ہے اور ملیحہ ماہی بے آب کی طرح تڑپ رہی ہے جبکہ۔۔۔

ھیا آپ ڈیلی پاکستان کے مافوق الفطرت میں ایسی حیرت انگیز شائع کرتے ہیں جو واقعی بندے کو حیران بھی کرتی ہیں اور پریشان بھی۔میں بھی آپ کو اپنی سہیلی کا واقعہ سنانا چاہتی ہوں ۔ملیحہ میرے ساتھ ایم اے انگلش کررہی تھی ۔وہ فیشن ایبل اور کھاتے پیتے گھرانے سے تعلق رکھتی تھی،اسکے پاس موبائل کا نیا برانڈ ہوا کرتا تھا ۔البتہ مزاج کی شائستہ تھی۔تمیز سے بات کرتی اور کبھی تکبرانہ لیجے میں نہیں بولتی تھی کہ جس سے اسکی امارت جھلکتی ہو۔
ایک ہفتہ جب وہ یونیورسٹی نہیں آئی تو ہم دوست اسکے لئے پریشان ہوگئے ۔اس کا فون بھی نہیں لگ رہا تھا ۔ابھی ہم سوچ رہے تھے کہ اسکا پتہ کیا جائے کہ اگلے دن وہ یونیورسٹی آگئی،اسکی رنگت دنوں میں ہی پیلاہٹ میں بدل گئی تھی،آنکھیں بھی حلقوں سے بھر گئی تھی۔میں نے اسکی خیریت پوچھی تو اس نے جواب دیا کہ بس طبیعت خراب رہنے کی وجہ سے وہ یونیورسٹی نہیں آسکی۔