خونریزی کی وارداتوں میں لندن نے نیویارک کو پیچھے چھوڑ دیا

خونریزی کی وارداتوں میں لندن نے نیویارک کو پیچھے چھوڑ دیا

لندن میں سرعام خونریزی کی لہر میں کمی نہ آئی،خونریزی کی وارداتوں میں لندن نے نیویارک کو پیچھے چھوڑ دیا۔برطانوی میڈیا کے مطابق لندن کے شمالی علاقے ٹوٹنہم میں دو گروہوں کے درمیان فائرنگ کے تبادلے میں ایک سترہ سالہ لڑکی گولیوں زد میں آکر جان سے گئی۔وال ٹہیم اسٹو میں ایک سولہ سالہ نوجوان فائرنگ سے جبکہ ایک سترہ سالہ نوجوان چاقو کے وار سے شدید زخمی ہوگیا۔ایک رپورٹ کے مطابق گزشتہ دو ماہ میں خونریزی کی وارداتوں میں لندن نے نیویارک کو پیچھے چھوڑ دیا ہے، صرف فروری کے مہینے میں نیویارک میں چودہ جبکہ لندن میں خونریزی کی پندرہ وارداتیں ہوئیں۔لندن پولیس کے اعداد وشمار کے مطابق سال 2014 کے بعد لندن میں سرعام قتل کی وارداتوں میں 38 فی صد اضافہ ہوا ہے جبکہ رواں سال ایسی 47 وارداتیں ہو چکی ہیں۔