”اونٹاریو کے پریمیٸر ڈگ فورڈ صحت عامہ کے سخت اقدامات کرنے جارہے ہیں“۔

”اونٹاریو کے پریمیٸر ڈگ فورڈ صحت عامہ کے سخت اقدامات کرنے جارہے ہیں“۔

اونٹاریو پریمیٸر ڈگ فورڈ کا کہنا ہے کہ یہ ممکن ہے کہ وہ کل سے جلد ہی صوبہ بھر میں ایمرجنسی بریک کے علاوہ صحت عامہ کی مزید پابندیوں کا بھی اعلان کردیں کیوں کہ کورونا کیسز میں مُسلسل اضافہ ہوتا جارہا ہے اور اسپتالوں پہ دباؤ بڑھتا جاتا ہے۔ فورڈ نے منگل کو کہا کہ پچھلے ہفتے کے ہنگامی وقفے کے اعلان کے وسیع پیمانے پر اثرات کے باوجود کہ جس نے آؤٹ ڈور کھانے سے لے کر تمام سرگرمیوں کو بند کردیا ہم مزید پابندیاں لگانے والے ہیں۔“ انہوں نے کہا اور پھر ہمیں اس مسئلے پر توجہ مرکوز کرنا ہوگی کہ یہ مسئلہ زیادہ وہاں ہے جہاں تین خطے ، یارک ، پیل اور ٹورنٹو میں کووڈ  کے 60 فیصد کیسز پاۓ جاتے ہیں۔ انہوں نے کہا " کام تو پورے صوبے میں کرنا چاہیۓ لیکن ہم بس اُنھی علاقوں پر توجہ مرکوز کر رہے ہیں جہاں کورونا کیسز  زیادہ ہیں۔" انہوں نے کہا کہ وہ کل نئے اقدامات پر تبادلہ خیال کریں گے لیکن انہوں نے اس بات کا اعادہ کیا کہ انہیں ریستوران بند رکھنے پر بہت افسوس ہے۔ انہوں نے مزید کہا ، "مجھے ایسا کرنے سے نفرت ہے لیکن پھر بھی ہمیں مزید پابندیاں عائد کرنا ہوں گی۔" صوبے میں گُزشتہ پانچ دنوں میں کووڈ 19 کے تقریباً 15000 نئے کیسز رجسٹر ہُوۓ اور اسپتالوں میں بھی اِس وقت کسی اور مرض کے  مقابلے میں کووڈ 19 کے مریض زیادہ انتہائی نگہداشت میں ہیں۔ 
    وباٸ امراض کے ماہر نے فورڈ کو مشورہ دیا ہے کہ کم سے کم دو مرتبہ 2-4 ہفتوں تک گھر پہ ہی رہنے کا حکم جاری کیا جائے جنوری میں یہ کرنا تھا لیکن انتظامیہ نے انفیکشن کی اس تیسری لہر کے لئے ابھی تک کام نہیں کیا ہے۔