”سکِ کِڈز ہسپتال جی ٹی اے اسپتال میں بالغ مریضوں کے لِیۓ آٸ سی یو  میں آٹھ بستروں کا اِضافہ“۔

”سکِ کِڈز ہسپتال جی ٹی اے اسپتال میں بالغ مریضوں کے لِیۓ آٸ سی یو میں آٹھ بستروں کا اِضافہ“۔

سک کڈز اسپتال بالغ مریضوں کے لئے ضروری نگہداشت کے لئے ایک نیا یونٹ کھولنے کی تیاری کر رہا ہے کیونکہ کورونا کی تیسری لہر کی ہلاکت خیزی بُہت زیادہ ہے۔ رواں ہفتے جاری کردہ ایک نیوز ریلیز میں سکِ کڈز ہاسپٹل نے تصدیق کی ہے کہ وبائی امراض کے دوران شہر کے دیگر اسپتالوں میں مریضوں کی زادہ تعداد کے باعث آٸ سی یو میں جگہ کم پڑجانے کے بعد  اسپتال کے آئی سی یو نے بالغ مریضوں کو قبول کرنا شروع کیا ۔ 
           " انتہائی نگہداشت یونٹ  میں  مریضوں کے حالیہ اضافے نے بالغوں کی صحت کی دیکھ بھال کے نظام کو متاثر کِیا ہے جب کہ سکِ کڈز میں آئی سی یو کے داخلے کم ہی رہے ہیں۔ حال ہی میں سکِ کڈز سے کہا گیا ہے کہ وہ  بالغوں (تقریبا ً 40 سال اور اس سے کم عمر) کو داخل کرنے پر غور کریں۔ اسپتال سے جاری ایک خبر میں کہا گیا ہے کہ "کلیدی اسٹیک ہولڈرز کے ساتھ تفصیلی گفتگو اور مختلف کلینیکل ٹیموں کے ساتھ کافی غور و خوض اور تیاری کے بعد ،سکِ کڈز ہاسپٹل بالغ مریضوں کے لیۓ  اپنے آئی سی یو میں آٹھ بستروں کا یونٹ کھولنے کی تیاری کر رہی ہے۔" 
            جی ٹی اے کے بعض اسپتالوں میں مریضوں کو داخل کرنے کی گُنجاٸش ختم ہونے کے بعد اور مریضوں کو دوسرے اسپتالوں میں منتقل کرنے کی ضرورت پڑنے پر مریضوں کو سکِ کڈز منتقل کیا جائے گا۔ اسپتال سے جاری کردہ خبر میں کہا گیا ، "سک کِڈز میں بالغ مریضوں کی دیکھ بھال کرنے کے لئے کلینیکل مہارت ہے ، مریضوں کی مناسب دیکھ بھال، انفیکشن کی روک تھام اور اسے کنٹرول کے اقدامات شامل ہیں ، تاکہ تمام مریضوں ، اہل خانہ اور عملے کی حفاظت کو یقینی بنایا جاسکے۔ اس کے علاوہ ہمارے پاس ان مریضوں کو قبول کرنے کی گنجاٸش موجود ہے" ۔
منگل کے روز اونٹاریو میں انتہائی نگہداشت یونٹوں میں کووڈ 19 مریضوں کی تعداد 510 ریکارڈ کی گئی ہے۔ ماہرین ، بشمول صوبے کی اپنی سائنس ایڈوائزری ٹیبل کے ممبروں نے خبردار کیا ہے کہ اسپتالوں کو محفوظ رکھنے کے لئے صحت عامہ کی سخت پابندیوں کی ضرورت ہے۔ ذرائع نے سی پی ٹی وی نیوز چینلز کو تصدیق کی ہے کہ وزیر اعظم اب نئے اقدامات پر عمل درآمد کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں ، جس میں اسٹاپ ایٹ ہوم آرڈر بھی شامل ہے جس میں دیکھا جائے گا کہ غیر ضروری خوردہ اسٹورز کم سے کم چار ہفتوں تک بند رہیں۔ ٹورنٹو کے مائیکل گیرن ہسپتال میں طبی نگہداشت کے میڈیکل ڈائریکٹر ، ڈاکٹر مائیکل وارنر نے بدھ کو کہا کہ صوبہ کورونا کی زیادتی والی جگہوں پر رہنے والے تمام بالغ افراد کو ٹیکے لگائے بغیر صحت کی دیکھ بھال کے نظام کی حفاظت ممکن نہیں۔ " وارنر نے بدھ کو جاری کیے گئے ایک ویڈیو بیان میں کہا۔ "جب تک ہم اس کی اصل وجہ پر توجہ نہ دیں ، یہ چار ہفتوں یا اس کے باوجود یہ طویل ہوگا ، بیکار ہوجائے گا اور زیادہ لوگ مر جائیں گے۔"