اونٹاریو میں ایمرجنسی آرڈرز کا نیا بل متعارف

اونٹاریو میں ایمرجنسی آرڈرز کا نیا بل متعارف

اونٹاریو حکومت نے کورونا وباء سے متعلق بعض ایمرجنسی آرڈرز کوآئندہ سال تک توسیع دینے کیلئے نیا قانون متعارف کروا دیا۔ نئی قانون سازی کیلئے بل کل صوبائی اسمبلی میں پیش کیا جائیگا جس کے تحت حکومت مہینے میں ایک بار کچھ ایمرجنسی آرڈر ز میں ترمیم کر سکتی ہے یا انہیں توسیع دے سکتی ہے اور یہ قانون منظوری کے ایک سال بعد ختم ہو جائیگا۔ سالیسٹر جنرل سلویا جونز کاکہنا ہے کہ تجویز کردہ بل محکمہ صحت کے کورونا کیخلاف فوری و لازمی طور پر درکار اقدامات اور اونٹاریو کی محفوظ بحالی کے درمیان پل کا کردار ادا کرے گا۔اس وقت رائج قانون کے تحت صوبائی حکومت صرف ہنگامی حالت کو نافذ رکھتے ہوئے صر ف ایمرجنسی آرڈرز جاری کر سکتی ہے۔ وزیراعلی ڈگ فورڈ کا کہنا ہے کہ اس نئے قانون کے ذریعے ہم نئے ایمرجنسی آرڈرز جاری کر سکیں گے جن میں ترمیم بھی ہو سکے گی اور ختم بھی کئے جا سکیں گے۔ اونٹاریو میں ہنگامی حالت کی مدت15جولائی کو مکمل ہو رہی ہے تاہم وزیراعلی کے دفتر کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ ہنگامی حالت کے نفاذ میں 24جولائی تک توسیع کیلئے اسمبلی میں قرار داد لا رہے ہیں تاکہ اس بات کو یقینی بنایا جا سکے کہ صوبائی ڈیکلیریشن اور نئے بل پر عملدر آمد شروع ہونے تک جو وقت ہے اس میں کوئی فاصلہ نہ رہے۔اگر یہ بل منظور ہو گیا تو حکومت صوبے کے مخصوص حصوں کو ضرورت پڑنے پر یا وبا دو دوبارہ پھیلائو کی صورت میں لاک ڈائون کی پوزیشن پر لے جا سکتی ہے۔ اس بل کے ذریعے ہیلتھ کیئر سٹاف کی دوبارہ تعیناتی کا عمل جاری رہے گا اور سماجی اجتماعات کو محدود کرنے سے متعلق محکمہ صحت کے احکامات میں ردو بدل بھی ہو سکے گا۔