ٹڈاپ اسکینڈل، یوسف رضا گیلانی سمیت26ملزمان پر فرد جرم عائد

ٹڈاپ اسکینڈل، یوسف رضا گیلانی سمیت26ملزمان پر فرد جرم عائد

وفاقی اینٹی کرپشن نے ٹریڈ ڈیولیپمنٹ اتھارٹی آف پاکستان(ٹڈاپ)اسکینڈل میں سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی اور دیگر ملزمان پر فرد جرم عائد کردی۔کراچی میں وفاقی اینٹی کرپشن کورٹ میں ٹڈاپ اسکینڈل کی سماعت ہوئی۔ عدالت نے سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی سمیت دیگر26 ملزمان پر فرد جرم عائد کردی، ملزمان میں یوسف رضا گیلانی سمیت طارق اقبال پوری، عبدالکریم داد پوتا، محمد زبیر، عدنان زمان، مرچو مل، یونس رضوانی، جاوید انور، نجم الحق، مرزا کریم بیگ، سہیل محمود، فرحان احمد اور عاصم رضوانی اور دیگر  شامل  ہیں۔مقدمہ میں 10 سے زائد ملزمان اشتہاری ہیں جن میں نعمان احمد، فرحان جنیجو، میاں محمد طارق، اختر محمود، مہر ہارون رشید، اللہ داد اور عابداللہ شامل ہیں، عدالت کی جانب سے فرد جرم عائد کرنے کے بعد ملزمان نے صحت جرم سے انکار کر دیا جس پر عدالت نے گواہان کو طلب کرتے ہوئے فریقین کو 11 اپریل تک جواب جمع کرانے کا حکم دیا ہے۔ اسکینڈل میں ملزمان پرفراڈ اور اختیارات کے ناجائز استعمال کے الزامات ہیں۔وفاقی اینٹی کرپشن کورٹ کے جج نے فرد جرم پڑھ کر سنائی اور یوسف رضا گیلانی سے استفسار کیا کہ آپ ان الزامات پر کیا کہیں گے،اس پر یوسف رضا گیلانی نے کہا کہ یہ الزامات جھوٹے ہیں وہ ان کی صحت سے انکار کرتے ہیں۔سماعت کے بعد عدالت کے باہر میڈیا سے گفتگو میں یوسف رضا گیلانی نے کہا کہ انہوں نے ایک ہی درخواست کی کہ ان کا جو فرنٹ مین ہے وہ کون ہے اس کی شکل ہی دکھادیں۔سیاسی معاملات پر گفتگو کرتے ہوئے سابق وزیراعظم نے کہا کہ میاں نواز شریف کو احساس ہوا  ہے کہ  میمو کیس مہیں  ان کی غلطی تھی، وزیراعظم کی چیف جسٹس سے ملاقات پرلوگ باتیں کررہے ہیں، اپنے دور میں ایک دفعہ چیف جسٹس کے پاس ڈنر میں گیا تھا جو میڈیا میں بھی آیاتھا۔