ایک ایسی ایپلی کیشن کے ذریعے جاسوسی کا انکشاف جو ہر پاکستانی کے سمارٹ فونز میں لازمی انسٹال ہوتی ہے، یہ کون سی ایپلی کیشن ہے؟ جان کر آپ کی دنیا واقعی ’اندھیر‘ ہو جائے گی

ایک ایسی ایپلی کیشن کے ذریعے جاسوسی کا انکشاف جو ہر پاکستانی کے سمارٹ فونز میں لازمی انسٹال ہوتی ہے، یہ کون سی ایپلی کیشن ہے؟ جان کر آپ کی دنیا واقعی ’اندھیر‘ ہو جائے گی

مختلف ایپلی کیشنز کے ذریعے سمارٹ فون ہیک کرنے اور قیمتی ڈیٹا چرانے کے واقعات تو سامنے آتے ہی رہتے ہیں لیکن اب ایک ایسی ایپلی کیشن کے ذریعے جاسوسی کرنے کا انکشاف ہوا ہے جو کم و بیش ہر پاکستانی کے سمارٹ فون میں انسٹال ہوتی ہے۔


یہ ایپلی کیشن کوئی اور نہیں بلکہ ’فلیش لائٹ‘ ایپلی کیشنز ہیں جنہیں ہرپاکستانی نے اپنے موبائل انسٹال کر رکھا ہوتا ہے تاکہ وہ بجلی چل جانے کی صورت میں اسے استعمال کر سکیں لیکن اب یہ انکشاف ہوا ہے کہ گوگل پلے سٹور پر دستیاب ٹاپ ٹین فلیش لائٹ ایپلی کیشنز بھی جاسوسی کیلئے استعمال کی جا رہی ہیں۔ 
سیکیورٹی ماہرین کے مطابق جب کوئی صارف ان ایپلی کیشنز کو انسٹال کرتا ہے تو اسے ایس ایم ایس، کانٹیکٹس سمیت دیگر قیمتی معلومات تو رسائی کی اجازت مل جاتی ہے جس کے بعد وہ جاسوسی کا کام کرتے ہوئے یہ قیمتی ڈیٹا چرا لیتی ہیں جو انٹرنیٹ کنیکٹ ہونے کی صورت میں ہیکرز تک پہنچ جاتا ہے۔ 
ذرائع کے مطابق ان ایپلی کیشنز کے باعث اب تک 50 کروڑ وافراد متاثر ہو چکے ہیں اور ان میں سے زیادہ تر افراد کی جانب سے استعمال ہونے والی تمام ایپلی کیشنز گوگل پلے سٹور سے ہی انسٹال کی گئیں