کامن ویلتھ گیمز میں پاکستانی ٹیموں کا گولڈ کوسٹ میں پڑا ئو

کامن ویلتھ گیمز میں پاکستانی ٹیموں کا گولڈ کوسٹ میں پڑا ئو

 21ویں کامن ویلتھ گیمز میں شرکت کیلئے  پاکستان کی ٹیموں نے گولڈ کوسٹ میں قائم ایتھلیٹس ولیج میں پڑائو ڈال دیا۔21ویں کامن ویلتھ گیمز میں شرکت کیلئے  پاکستان کی ایتھلیٹکس، بیڈمنٹن، ہاکی، باکسنگ، ٹیبل ٹینس، سوئمنگ، اسکواش، شوٹنگ اور ویٹ لفٹنگ کی ٹیموں نے گولڈ کوسٹ میں قائم ایتھلیٹس ولیج میں پڑائو ڈال دیا۔ریسلنگ کی ٹیم 8 اپریل کو پہنچے گی، پاکستانی دستہ 56 کھلاڑیوں اور21 آفیشلز پر مشتمل ہے، آسٹریلیا پانچویں بار دولت مشترکہ گیمز کی میزبانی کرنے جارہا ہے، اس سے قبل یہاں 1938(سڈنی )، 1962 (پرتھ)، 1982(برسبین) اور2006 ( میلبورن)میں کامن ویلتھ گیمز منعقد ہوچکے ہیں۔واضح رہے کہ ان گیمز کا آغاز 1930 میں برٹش گیمز کے نام سے ہوا تھا جسے 1978 میں کامن ویلتھ گیمز کا نام دے دیاگیا تھا، دولت مشترکہ سے وابستہ 6 ممالک آسٹریلیا، کینیڈا، انگلینڈ، نیوزی لینڈ، اسکاٹ لینڈ اور ویلز کو اب تک منعقدہ تمام گیمز میں شرکت کا اعزاز حاصل ہے۔کامن ویلتھ گیمز انتظامیہ کی جانب سے ان مقابلوں کو کامیاب بنانے کیلیے بھرپور اقدامات کیے گئے ہیں، گولڈ کوسٹ میں ایتھلیٹ ولیج کو نہایت دلکش رنگ برنگی لائٹوں ، گیمز میں شریک تمام ممالک کے جھنڈوں اور میسکوٹ کے بڑے بڑے ماڈلز سے سجایاگیا ہے۔گیمز میں شرکت کیلئے آنے والی ٹیموں کی رہنمائی  کیلئے  برسبین ایئرپورٹ سے ایتھلیٹ ولیج تک 16 برس کے نوجوانوں سے لیکر 80 سال کے مردو خواتین رضاکار شب و روز خدمات انجام دے رہے ہیں، گیمز میں شریک ٹیموں کو خوش آمدید کہنے کیلیے خیرمقدمی تقریب  منگل 3 اپریل کو شام 4 بجے ایتھلیٹ ولیج میں منعقد ہوگی۔