چار روزہ ٹیسٹ: آئی سی سی کے بیک فٹ پر جانے کا امکان

 چار روزہ ٹیسٹ: آئی سی سی کے بیک فٹ پر جانے کا امکان

 ٹیسٹ میچ کوچار روز تک محدود کرنے کی تجویز کو پذیرائی نہ ملنے پر آئی سی سی کے بیک فٹ پر جانے کا امکان ہے۔سابق آسٹریلین کپتان رکی پونٹنگ بھی اس طرز کے مقابلے کو کھیل کیلئے سود مند نہیں سمجھ رہے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ وہ چار روزہ ٹیسٹ کی مخالفت کریں گے اور ممکنہ تبدیلی کے پیچھے کی وجہ جاننا چاہتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پانچ دن تک میچ کا حالیہ فارمیٹ بہتر انداز میں کام کر رہا ہے لہٰذا اْسے بدلنے کی کوئی ضرورت محسوس نہیں ہوتی۔ رکی پونٹنگ کے مطابق وہ یہ بات جانتے ہیں کہ گزشتہ دو سال میں چار روزہ کرکٹ مقابلے زیادہ ہوئے تاہم آخری دہائی میں کتنے ٹیسٹ میچز ڈرا ہوئے ان کو بھی ملحوظ خاطر رکھنا چاہئے اور انہیں حیرت ہوتی جب اس عرصے میں چار روزہ میچز کھیلے جاتے تو زیادہ مقابلے بے نتیجہ رہتے۔ اس طرز کے مقابلوں کو کرانے کا ایک پہلو پیسوں کی بچت اور تجارتی بھی ہوگا تاہم یہ ایک ایسی چیز ہے جس کے بارے میں نہیں لگتا کہ کوئی اسے دیکھنا چاہتا ہے۔