ویرات کوہلی کو انکوائری کا سامنا۔۔۔۔

ویرات کوہلی کو انکوائری کا سامنا۔۔۔۔

بھارتی کپتان ویرات کوہلی کو مفادات کے تصادم سے متعلق انکوائری کا سامنا ہے جنہوں نے دو تجارتی منصوبوں میں عہدے سنبھال رکھے ہیں اور مدھیہ پردیش کرکٹ ایسوسی ایشن کے تاحیات رکن سنجیو گپتا نے بھارتی کپتان کیخلاف ایک سے زائد عہدوں کی شکایت درج کرادی ہے۔ سنجیو گپتا نے اپنی درخواست میں الزام عائد کیا ہے کہ ویرات کوہلی کے ایک سے زائد عہدے بی سی سی آئی رولز38کی شق نمبر چار کی صریح خلاف ورزی ہیں جس کی منظوری سپریم کورٹ آف انڈیا بھی دے چکی ہے کہ کوئی بھی فرد بہ یک وقت دو عہدوں پر فائز نہیں رہ سکتا لہٰذا انہیں ایک عہدہ چھوڑنا پڑے گا۔سنجیو گپتا نے اس حوالے سے بھارتی بورڈ کے ایتھکس آفیسر اور محتسب جسٹس ریٹائرڈ ڈی کے جین،صدر بی سی سی آئی سوراو گنگولی اور چیف ایگزیکٹو آفیسر راہول جوہری سمیت دیگر ایگزیکٹوز کو بھی ای میل ارسال کرتے ہوئے قوانین کی خلاف ورزی سے آگاہ کیا ہے۔جسٹس ریٹائرڈ ڈی کے جین نے تصدیق کی کہ انہیں شکایت موصول ہوئی ہے جس کا جائزہ لینے پر واضح ہوسکے گا کہ اس پر کوئی کیس بن سکتا ہے یا نہیں اور اگر شواہد ویرات کوہلی کیخلاف ہوئے تو انہیں جواب دینے کا موقع فراہم کیا جائے گا۔واضح رہے کہ سنجیو گپتا ماضی میں سچن ٹنڈولکر،وینکٹ لکشمن اور روہول ڈریوڈ کیخلاف بھی مفادات کے ٹکراؤ سے متعلق شکایات درج کرا چکے ہیں جن کو نوٹسز ارسال کئے گئے مگر انہیں کلیئر کردیا گیا تھا۔