” ہیملٹن: 3 اپارٹمنٹ بلڈنگز میں کورونا کیسز کی تعداد بڑھ کر 103 ہوگٸ“۔

” ہیملٹن: 3 اپارٹمنٹ بلڈنگز میں کورونا کیسز کی تعداد بڑھ کر 103 ہوگٸ“۔

ہیملٹن کے ایک اپارٹمنٹ ٹاور میں کووڈ-19 پہلے سے کہیں زیادہ پھیل چکا ہے اور اب وہاں کیسز کی تعداد 100 سے زیادہ ہوگٸ ہے۔ پیر کو دوسری دو رہائشی عمارتوں میں 50 مزید کیسز کا سامنے آۓ۔ 4 مئی کے بعد سے ، ولسن اور ویلنگٹن اسٹریٹ کے علاقے میں ، 235 ربیکا اسٹریٹ کی ایک عمارت میں کووڈ-19 کے متاثرین کی تعداد 55  سے بڑھ کر 103 ہوگئی ہے۔ تمام کیسز کورونا کی  B.1.1.7 قسم کے ہیں جو اب صوبے میں بہت زیادہ پھیل چکی ہے اور کورونا کی اس قسم سے ایک شخص کی موت ہوگئی ہے۔ ہیملٹن کے میئر فریڈ آئزن برجر نے ایک نیوز چینل کو بتایا کہ پیرامیڈیکس گذشتہ دو روز سے 164 یونٹ کی عمارت میں گھر گھر جا کے لوگوں کا کورونا ٹیسٹ کر رہے ہیں۔ انھوں نے کہا ، "ہم پراپرٹی مینیجر کے ساتھ مل کر ان عوامل کی نشاندہی کرنے کے لئے کام کر رہے ہیں جو اپارٹمنٹ کمپلیکس میں اس وباء کو جنم دے رہے ہیں۔"  صحت عامہ کے عہدے داروں نے گزشتہ ہفتے کہا تھا کہ "اپارٹمنٹ کے رہائشیوں کے مابین قریبی رابطہ ، اور مختلف گھرانوں / اکائیوں سے تعلق رکھنے والے افراد کے مابین تعلق اس پھیلاؤ کا ذمہ دار ہے۔ انھوں نے کہا کہ محکمہ صحت کے عہدےدار شہر میں دو دیگر اپارٹمنٹ عمارتوں  دی ویلج اپارٹمنٹس 151 کوئین اسٹریٹ نارتھ اور ویلنگٹن پلیس اپارٹمنٹس 125 ویلنگٹن اسٹریٹ نارتھ میں ممکنہ کیسز کی تحقیقات کر رہے ہیں۔ آئزن برجر نے کہا "ہم پراپرٹی مینجمنٹ کمپنیوں پر انحصار کرتے ہیں کہ وہ صحیح کام کر رہے ہیں۔"  وبا سے متاثرین کی پیر کے روز تصدیق ہوگئی تھی اور اب تک کورونا B .1.1.7 کے مجموعی طور پر 51 کیسز ریکارڈ ہوۓ ہیں۔ 
           اسپین ، جنوبی کوریا ، ہانگ کانگ اور جاپان کی تحقیق سے یہ بات سامنے آٸ ہے کہ باقاعدگی سے اپارٹمنٹ ہوا کی آمد و رفت کی نالیاں بھی اپارٹمنٹس، کے مابین ایروسولائزڈ وائرس پھیلانے میں معاون ثابت ہوسکتا ہے ، جو اندر کے باشندوں کو معلوم نہیں ہیں۔ کینیڈا اور صوبائی پبلک ہیلتھ گائیڈنس نے اب تک کورونا وائرس کے ایروسول ٹرانسمیشن کے امکان کو کم یا ختم کردیا ہے ، بجائے اس کے کہ انفیکشن کا سبب بننے والے بڑے سانس کی بوندوں سے رابطے سے بچنے کے لئے دو میٹر جسمانی فاصلے پر زور دیا جائے۔