” ٹورنٹو: اغوا اور قتل کے الزام میں ملوث 21 سالہ ملزم گرفتار“۔

” ٹورنٹو: اغوا اور قتل کے الزام میں ملوث 21 سالہ ملزم گرفتار“۔

پولیس کا کہنا ہے کہ ایک 21 سالہ شخص برامپٹن میں ایک اغوا اور ٹورنٹو میں فائرنگ کے الزام میں مطلوب تھا اور اسے ٹیمینس میں گرفتار کیا گیا۔ بدھ کو جاری کردہ ایک نیوز ریلیز میں ، ٹورنٹو پولیس نے کہا کہ کوامی گارووڈ کو گزشتہ جمعہ کو ٹیمینس پولیس سروس نے اس وقت گرفتار کیا تھا جب افسران منشیات کے ایک کیس کی تفتیش کررہے تھے۔ پیل ریجنل پولیس نے مارچ میں گارووڈ کی گرفتاری کا وارنٹ جاری کیا تھا جب اس نے مبینہ طور پر برامپٹن میں واقع ایک گھر سے ایک لڑکی کو اغوا کیا تھا۔ پولیس نے اغوا کےواقعے کی تحقیقات اسی وقت سے شروع کردی تھی۔ جب افسران کو 28 مارچ کی صبح تقریباً 3 بجے برامپٹن میں ایڈونچرا ڈرائیو کے ایک گھر سے فون کرکے بلایا گیا تھا اور یہ کہا گیا تھا یہاں کچھ غیر معمولی حالات ہیں۔ فون کال کی اطلاع پہ جب افسر بتاۓ گۓ پتے پر پہنچے تو رہائش گاہ کے اندر سے چیخنے کی آوازیں سنائی دے رہی تھیں۔ پولیس نے بتایا کہ اہلکار دروازہ توڑ کر گھر میں داخل ہوۓ اور  چیخوں کے آواز کے تعاقب میں گیراج تک جا پہنچے، جہاں انھوں نے گاڑی کی ڈرائیونگ سیٹ پر ایک شخص اور پچھلی نشست پہ ایک خاتون کو دیکھا۔ پولیس اور اس شخص کے مابین بات چیت ہوئی ، اس شخص کی شناخت گارڈ ووڈ کے نام سے ہوٸ۔ صوبے کے اسپیشل انویسٹی گیشن یونٹ کے مطابق ، دو افسروں نے مشتبہ شخص پر قابو پانے میں ناکامی پر فاٸرنگ کی  لیکن ملزم لڑکی کو ڈھال بنا کے نکلنے میں کام ہوگیا۔ پولیس کے مطابق مغوی لڑکی ملزم کے قبضے میں ہی تھی۔ پولیس نے بتایا کہ دو دن بعد ، متاثرہ لڑکی کو فرار ہونے کا موقع ملا اور وہ اپنے اغوا کنندہ کے چنگل سے نکل بھاگی۔ تفتیش کنندگان کا کہنا ہے کہ وہ ایک ٹیکسی میں بیٹھی اور فوری طور پر پیل ریجنل پولیس ڈویژن میں پہنچ گئی۔ پولیس کے مطابق ، اس جبری قید کے دوران وہ زخمی بھی ہوٸ۔ پچھلے ہفتے گرفتاری کے بعد ، گارووڈ کو ٹیمینس سے واپس پیل ریجن پہنچایا گیا ہے ، جہاں اسے کئی الزامات کا سامنا کرنا پڑے گا، ان میں اغوا ، زبردستی قید ، قاتلانہ حملہ، بغیر لائسنس کا بھاری آتشیں اسلحہ شامل ہے۔ گارووڈ کو ٹورنٹو پولیس نے جولائی 2020 میں بھی فاٸرنگ کے سلسلے میں بھی مطلوب قرار دیا تھا۔ فائرنگ کے فورا بعد ہی گارووڈ کے لئے گرفتاری کا وارنٹ جاری کیا گیا تھا۔ پولیس نے اس پہ قتل عمد کا الزام عائد کیا ہے۔ ملزم کو آج برامپٹن کی عدالت میں پیش کیا جاۓ گا.